LetrasDhamak

Quratulain Balouch

Última atualização em: 21 de Julho de 2017
Estas letras estão à espera de revisão
Se encontrou erros, por favor ajude-nos corrigindo-os.

عجب غم کی دھمک دل پر پڑی ہے اداسی آئینوں سے جھانکتی ہے یہ کس منظر پہ تم نے ساتھ چھوڑا

میری تصویر آدھی رہ گئی ہے تمہارا ہاتھ ابھی تو ہاتھ پر تھا اچانک آنکھ میری کھل گئی ہے ابھی کل تک فلک تھا دسترس میں اور اب اپنی زمیں بھی اجنبی ہے عجب غم کی دھمک دل پر پڑی ہے تمہاری یاد گھبرا کر جہاں سے میرے شانے سے لگ کر سو گئی ہے تیرے ہم خواب ہونے کی تمنا میری بے خوابیوں میں جاگتی ہے عجب غم کی دھمک دل پر پڑی ہے فنا کے بعد بھی خواہش ہے تیری مسافت ہے مگر کتنی کڑی ہے کھڑے ہیں سانس کی سرحد پہ تنہا ہمارے درمیاں بس زندگی ہے عجب غم کی دھمک دل پر پڑی ہے اداسی آئینوں سے جھانکتی ہے یہ کس منظر پہ تم نے ساتھ چھوڑا میری تصویر آدھی رہ گئی ہے میری تصویر آدھی رہ گئی ہے

  • 0

Últimas atividades

Sincronizada porUmmer Hussain Dar
Tradução porRaven Harlem

O Musixmatch para Spotify e
iTunes está agora disponível para
o seu computador

Descarregar agora